ⓘ Free online encyclopedia. Did you know? page 197




                                               

بٹ سویٹس اینڈ بیکرز

بٹ سویٹس اینڈ بیکرز لاہور، پاکستان میں واقع ایک بیکری اور کنفیکشنری کا سلسلہ ہے۔ اس کے پروسیسنگ یونٹس اور لاہور میں 50 اسٹورز ہیں۔ کمپنی کا قیام غلام قادر بٹ نے کیا تھا۔

                                               

گورمے بیکرز اینڈ سویٹس

گورمے کا آغاز فیروزپور روڈ لاہور کے ایک معروف مقام اچھرہ پہ ایک چھوٹی دکان کی صورت میں ہوا، جو وقت کے ساتھ پاکستان کی صف اول کی صنعت کا درجہ اختیار کر گئی۔ گورمے کے بانی چیئرمین چودھری محمد نواز چٹھہ نے 11 سال تک شیزان میں خدمات سر انجام دیں اور ...

                                               

ہیلینا گولنگا

سماک ہیلینا سیرین گولنگا کیچوا سرائیکو پاستازہ کی کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے ایک مقامی دیہاتی اور انسانی حقوق کے کارکن ہیں۔ ، ایکواڈور۔

                                               

یوکرین کی جدید تاریخ

یوکرین ایک ملک کے تصور کے ساتھ اور اہلِ یوکرین قومیت کے طور پر یوکرینی نشاۃ ثانیہ کے ساتھ وجود میں آئے جو انیسویں صدی میں کسانوں کی بغاوت کے ساتھ 1768ء-1769ء میں پیش آئے تھے۔ اس کا نتیجہ پولش–لیتھووینیا دولت مشترکہ کی تقسیم کی شکل میں رونما ہوا۔ ...

                                               

امیر تیمور

امیر تیمور جو تیمور لنگ کے نام سے بھی مشہور تھا تیموری سلطنت کا بانی اور ایک تاریخ عالم کا ایک عظیم جنگجو حکمران تھا۔ تیمور کے استاد کا نام علی بیگ تھا کہا جاتا ہے کہ استاد علی بیگ اپنے طالب علموں کوسبق یاد کرانے کے لیے ڈنڈے کا استعمال کرتے تھے ل ...

                                               

ساسانی سلطنت

ساسانی سلطنت چوتھی ایرانی اور دوسری فارسی سلطنت تھی جو 226ء سے 651ء تک قائم رہی۔ ساسانی سلطنت کا بانی ارد شیر اول تھا جس نے پارتھیا کے آخری بادشاہ ارتبانوس چہارم کو شکست دے کر سلطنت کی بنیاد رکھی جبکہ آخری ساسانی شہنشاہ یزد گرد سوم تھا جو دین اسل ...

                                               

قزلباش

13 ویں صدی عیسوی میں اناطولیہ اور کردستان میں پھیلے مسلح شیعہ گروہ قزلباش کہلاتے تھے جنہوں نے بعد ازاں موجودہ ایران میں صفوی سلطنت کی توسیع میں بڑی مدد دی۔ قزلباش کا مطلب "سرخ ٹوپی والے" ہے۔ دراصل شاہ اسماعیل صفوی کے والد حیدر صفوی نے اپنے پیروؤں ...

                                               

تاریخ آرمینیا

ارمینیا کی تاریخ 6000 قبل مسیح تک پھیلی ہوئی ہے۔ آرمینیا میں پہلی سلطنت ارارات کی تھی ۔ خود ارمینی باشندے ، ایک انڈو یورپی عوام ، 7 ویں صدی قبل مسیح میں یہاں پہنچے۔ تیسری صدی میں آرمینیا تاریخ کی پہلی عیسائی ریاست بنی۔ آرمینیائی اپوسٹولک چرچ نے س ...

                                               

ترک جنگ آزادی

ترک جنگ آزادی پہلی جنگ عظیم میں سلطنت عثمانیہ کی شکست کے بعد ترک قوم پرستوں کی ایک سیاسی و عسکری تحریک تھی، جس کے نتیجے میں جمہوریہ ترکیہ کا قیام عمل میں آیا۔ اس تحریک کا آغاز انقرہ میں ترک قوم پرستوں کی جانب سے مصطفیٰ کمال کی زیر قیادت مجلس کبیر ...

                                               

آرچڈیوک فرانز فرڈینینڈ کا قتل

آسٹریا کے آرچڈیوک فرانز فرڈیننڈ کا قتل آسٹریا ہنگری کے تخت کے ممکنہ وارث ، اور فرانز فرڈیننڈ کی بیوی سوفی، ڈچیس آف ہوہنبرگ، 28 جون 1914 کو سرائیوومیں اس وقت پیش آیا جب وہ گیریلو پرنسپل کے ہاتھوں جان لیوا زخمی ہوئے تھے۔ پرنسیپ ان چھ قاتلوں کے گروہ ...

                                               

آسٹریا ہنگری کی تحلیل

آسٹریا ہنگری کی تحلیل ایک اہم جغرافیائی سیاسی واقعہ تھا جو اندرونی معاشرتی تضادات کی نمو اور آسٹریا ہنگری کے مختلف حصوں کی علیحدگی کے نتیجے میں پیش آیا۔ ریاست کے خاتمے کی وجہ پہلی جنگ عظیم ، 1918 کی فصل کی ناکامی اور معاشی بحران تھا۔ 17 اکتوبر 19 ...

                                               

اٹلی کا اتحاد

اطالوی اتحاد ، بھی Risorgimento کے طور پر بھی جانا جاتا ہے ، وہ سیاسی اور سماجی تحریک تھی جس نے 19 ویں صدی میں اطالوی جزیرہ نما کی مختلف ریاستوں کو مملکت اطالیہ کی واحد ریاست میں متحد کیا۔ یہ عمل 1848 کےانقلابوں سے شروع ہوا ، جو 20 اور 30 کی دہائ ...

                                               

بلاد الشام

بلاد الشام سرزمین شام میں خلافت راشدہ، خلافت امویہ اور خلافت عباسیہ کے تحت ایک صوبہ تھا۔ اسے بازنطینی سلطنت سے جنگ یرموک کے فیصلہ کن معرکے کے بعد حاصل کیا گیا تھا۔

                                               

آل طاہر

آل طاہر 821ء سے 873ء تک شمال مشرقی ایرانی علاقے خراسان پر حکومت کرنے والا ایک خاندان تھا جس کی حکومت میں موجودہ ایران، افغانستان، تاجکستان، ترکمانستان, پاکستان اور ازبکستان کے علاقے شامل تھے۔ طاہری حکومت کا دار الحکومت نیشا پور تھا۔ حالانکہ یہ خا ...

                                               

ابو الخیر خان

ابو الخیر خان خانہ بدوش ازبک قبائل کا رہنما تھا۔ ابو الخیر خان 1412ء میں پیدا ہوا- ان کے والد کا نام دولت شیخ ابن ابراہیم خان تھا جو شیبان خان کے خاندان سے تھے - شیبان خان دراصل جوجی خان کا سب سے چھوٹا بیٹا تھا۔ تو گویا یہ چنگیز خان کے اہل خانہ س ...

                                               

ارسلان خان

1102 میں، سلجوقی احمد سنجرنے ماوراء النہر کا قبضہ لے لیا اور ارسلان خان محمد ، جن کے باپ سلیمان ب مدد کی. داؤد کی شادی سلجوقی سلطان ملک شاہ کی بیٹی سے ہوئی تھی ۔ محمد نے ایک چوتھائی صدی سے زیادہ حکومت کی۔ راوندی اور الحسینی کے مطابق ، اس نے مسلسل ...

                                               

ازبکستان کی تاریخ

پہلی ملینیم قبل از مسیح میں ایران کے خانہ بدوش نے وسط ایشیا کی ندیوں پر آبپاشی کا نظام قائم کیا اور بخارا و سمرقند جیسے شہر آباد کیے۔ اپنے محل وقوع کی وجہ سے یہ علاقے بہت جلد آباد ہو گئے اور چین و یورپ کے درمیان میں آمد و رفت کا سب سے اہم راستہ ب ...

                                               

امارت بخارا

امارت بخارا وسط ایشیا کی ایک مسلم ریاست تھی جو 1785ء سے 1920ء تک قائم رہی۔ یہ آمو دریا اور سیر دریا کے درمیانی علاقوں پر مشتمل تھی جسے ماوراء النہر کہا جاتا تھا۔ اس کا مرکزی خطہ دریائے زرفشاں کے زیریں علاقے کی زمین تھی اور اس کے شہری علاقے سمرقند ...

                                               

امام قلی خان

بخارا خانیت کے خان ولی محمد 1605−1611 کا جانشین اس کا بھتیجا تھا ، جو اس کے بڑے بھائی دین محمد کا امام قلی خان 1611−1642 بیٹا تھا۔ ولی محمد کی مرتب کی گئی پالیسی نے امرا کی عدم اطمینان کو جنم دیا جنہوں نے ان کا تختہ پلٹ دیا اور اسے امام قلی خان ک ...

                                               

باقی محمد

1556 میں آئیون خوفناک کے لشکروں کے ذریعہ آستراخان کے قبضہ سے قبل ، چنگیز خان کی اولاد ، اپنے بیٹے جوچی اور توکئی-تیمور کے پوتے ، منگشلاک خان کے ذریعہ ، ماوواء النہر کے شیبانوں کے قریب بخارا خانت میں تھی ۔ اس کے پوتے جانی محمد خان نے عبداللہ خان د ...

                                               

بخارا امارت کے امیر

بخارا امارت کے امیر - بخارا امارات کا 1785 سے 1920 تک سب سے بلند سرکاری عہدہ تھا ۔ بخارا امارات میں امیر کا لقب منگیت ازبک خاندان کے حکمرانوں کے پاس تھا۔ امیر کو لامحدود طاقت حاصل تھی اور انہوں نے شریعت کے اصول مسلم روحانی اور اخلاقی ضابطہ اخلاق ...

                                               

بخارا انقلاب

بخارا انقلاب سے مراد 1917- 1925 کے واقعات ہیں ، جس کی وجہ سے سن 1920 میں امارات بخارا کا خاتمہ ، بخاری عوامی سوویت جمہوریہ کی تشکیل ، سرخ فوج کی مداخلت ، آبادی کی بڑے پیمانے پر مسلح مزاحمت باسماچی) ، بسماچی کو دبانے ، بخارا پیپلز سوویت جمہوریہ کو ...

                                               

تیموری سلطنت

ہندوستان میں قائم تیموری سلطنت کے لیے دیکھیے سلطنت مغلیہ تاریخ میں دو سلطنتیں تیموری سلطنت کہلاتی ہیں جن میں سے پہلی امیر تیمور نے وسط ایشیا اور ایران میں تیموری سلطنت کے نام سے قائم کی جبکہ دوسری ظہیر الدین بابر نے ہندوستان میں سلطنت مغلیہ کے نا ...

                                               

خان خیوا خانیت

خان آف خوارزم ، جو سوویت ہسٹوروگرافی میں خیونسکی خان کے نام سے بھی جانا جاتا ہے ازبک: Xiva xoni / Хива хони / خیوه خانی Xiva کی xoni / خیوا khoni / خیوه خانی) - خوارزم کی ریاست میں1511 سے 1920 تک اعلی ترین عوامی عہدہ تھا. خیوا خانیت میں خان کا لق ...

                                               

خانان خیوہ

خانان خیوہ یا خانان خوارزم یا خانیت خیوہ 1511ء سے 1920ء تک خوارزم کے تاریخی خطے میں قائم رہنے والی ایک وسط ایشیائی ریاست تھی۔ درمیان میں 1740ء سے 1746ء کے عرصے میں یہ نادر شاہ کی فتوحات کے نتیجے میں فارسی قبضے میں رہی۔ اس کا دار الحکومت خیوہ یا خ ...

                                               

دولت سامانیہ

دولت سامانیہ کی حکومت خلافت امویہ کے خاتمے کے بعد 874ء میں ماوراء النہر میں قائم ہوئی۔ اپنے مورث اعلیٰ اسد بن سامان کے نام پر یہ خاندان سامانی کہلاتا ہے۔ نصر بن احمد بن اسد سامانیوں کی آزاد حکومت کا پہلا حکمران تھا۔ ماوراء النہر کے علاوہ موجودہ ا ...

                                               

زلفيہ اسرائيل قيزى

زلفیہ (Зулфия ، پورا نام زلفيہ اسرائيل قيزى ، 1915–1996 تاشقند سے تعلق رکھنے والی ایک مشہور ازبکستانی شاعرہ و ادیبہ ہیں اس کا نام فارسی زبان کے لفظ زلف سے لیا گیا ہے جس کے معنی خوبصورت بال کے ہیں، عموما شاعر اپنی محبونہ کے بالوں کو زلف سے تشبیہ د ...

                                               

سیدی علی رئیس

سیدی علی رئیس ایک عثمانی امیر البحر تھے۔ انہوں نے جنگ پریویزا 1538ء میں ترک بحری بیڑے کے بائیں بازو کی قیادت کی تھی۔ بعد ازاں انہیں بحر ہند میں عثمانی بحریہ کے کماندار کی حیثیت سے ترقی دی گئی اور اس حیثیت سے ان کی 1554ء میں گوا، ہندوستان کے قریب ...

                                               

سیف الدین باخرزی اور بیان قلی خان کے مقبرے

سیف الدین بخارسی اور بیان قلی خان مزارات سیف الدین بخارزی، ایک خراسانی شیخ، اور بایان قلی خان ، چغتائی حکمران کے لئے وقف مزارات رہے ہیں. یہ قرون وسطی کے بخارا سے مشرق میں فتح آباد نامی بستی میں واقع ہیں ، ماضی میں وسیع و عریض مذہبی کمپلیکس واقع ت ...

                                               

محمد شیبانی خان

ابو الفتح محمد شیبانی خان سولہویں صدی میں وسط ایشیا میں قائم ازبکوں کی سلطنت سلسلہ شیبانیان کا سب سے بڑا بادشاہ تھا جو ابو الخیر خان کے دوسرے بیٹے شاہ بداغ خان کا بیٹا تھا۔ ازبک قبائل ابو الخیر خان کے انتقال کے بعد دریائے سیحوں کی زیریں وادی میں ...

                                               

مالی جنگ

سانچہ:Campaignbox Northern Mali conflict مالی جنگ یا مالیئن خانہ جنگی تنازعات کا ایک سلسلہ ہے جو افریقہ میں مالی کے شمالی اور جنوبی حصوں کے درمیان جنوری 2012 سے شروع ہوا تھا۔ 16 جنوری 2012 کو ، متعدد باغی گروپوں نے شمالی مالی کے لئے آزادی یا اس س ...

                                               

دحیہ کلبی

دحیہ کلبی مشہور صحابی ہیں انہیں حسن صورت میں بڑی شہرت حاصل تھی جبرئیل آنحضرتﷺ کے پاس دحیہ کلبی کی صورت میں آیا کرتے تھے خلافت معاویہ بن ابی سفیان میں وفات پائی۔ جنگ احد اور اس کے بعد کے تمام اسلامی معرکوں میں کفارسے لڑتے رہے۔ 6 ھ میں حضور اقدس صل ...

                                               

تلمود

تلمود عبرانی زبان کا لفظ ہے جس کا مادہ لمد ہے۔ عبرانی میں لمد کے معنی وہی ہوتے ہیں جو عربی میں لمذ کے ہوتے ہیں، یعنی پڑھنا۔ اسی سے تلمیذ بمعنی شاگرد بھی آتا ہے۔ تلمود یہودیت کا مجموعہ قوانین ہے، جو یہوددیوں کی زندگی میں تقدس کا درجہ رکھتا ہے اور ...

                                               

تھیوڈور ہرتزل

تھیوڈور ہرتزل یا تھیوڈور ہرضل ، کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، عبرانی میں חוֹזֵה הַמְדִינָה ، Chozeh HaMedinah ، ریاست کی "بصیرت" دیکھنے والا کے طور پر بھی جانا جاتاہے۔) آسٹریائی مجرستانی صحافی، ڈراما نگار، سیاسی کارکن اور مصنف تھا جو بابائے جدید سی ...

                                               

تیسری صلیبی جنگ

تیسری صلیبی جنگ صلاح الدین ایوبی کے ہاتھوں بیت المقدس کی فتح کے بعد اسے بازیاب کرانے کی یورپی کوشش تھی جس میں یورپ کے مسیحیوں کو ناکامی ہوئی۔ یہ جنگ 1189ء سے 1192ء تک جاری رہی۔ اسے بادشاہوں کی صلیبی جنگ بھی کہا جاتا ہے کیونکہ اس میں مسیحی لشکر کی ...

                                               

جنگ حطین

جنگ حطین 4 جولائی 1187ء کو مسیحی سلطنت یروشلم اور ایوبی سلطان صلاح الدین کی افواج کی درمیان لڑی گئی۔ جس میں فتح کے بعد مسلمانوں نے پیش قدمی کرتے ہوئے بیت المقدس کو مسیحی قبضے سے چھڑالیا۔

                                               

جنگ عین جالوت

جنگ عین جالوت 3 ستمبر 1260ء میں مملوک افواج اور منگولوں کے درمیان تاریخ کی مشہور ترین جنگ جس میں مملوک شاہ سیف الدین قطز اور اس کے مشہور جرنیل رکن الدین بیبرس نے منگول افواج کو بدترین شکست دی۔ یہ جنگ فلسطین کے مقام عین جالوت پر لڑی گئی۔ اس فتح کے ...

                                               

علیا

علیا تارک وطن یہود کی مختلف ادوار اور علاقوں سے ارض مقدسہ کی جانب ہجرت کو کہا جاتا ہے. اس کی ایک تعریف اوپر کی جانب جانا" کی بھی کی جاتی - یعنی یروشلم کی جانب - "علیا کرنا" ارض مقدسہ کی جانب نقل مکانی / ہجرت کرنا ، صیہونیت کے سب سے بنیادی اصولوں ...

                                               

قوموں کے لیے نور

قوموں کے لیے روشنی یا قوموں کے درمیان نور یا قوموں کے لیے نور ایک یہودی مذہبی اصطلاح جو کتاب یسعیاہ سے عہد عتیق میں تورات سے اخذ کی گئی ہے۔ اس عبارت کا عمومی مفہوم یہودی قوم کے تمام اقوام عالم کے رہبر و راہنما کی حیثیت سے منتخب ہونا کیا جاتا ہے۔ ...

                                               

طورغود رئیس

طورغود پاشا عثمانی سلطنت میں ایک لیفٹیننٹ تھا جس کو عثمانی بحریہ میں لانے کا سہرا خیر الدین بارباروس کے سر ہے۔ عثمانی امیر البحر کپتان پاشا کہلاتا تھا۔ سلطنت کے معروف امیر البحروں میں خیر الدین باربروسا، پیری رئیس، حسن پاشا، پیالے پاشا، سیدی علی ...

                                               

گیریبالڈی

{{Infobox officeholder |honorific-prefix=منصب جامع |name=گیریبالڈی |image=Giuseppe Garibaldi.jpg |caption=Garibaldi in 1866 |office=Dictator of Sicily |term_start=17 May 1860 |term_end=4 November 1860 |office1=Member of the Senate of the Kingdom ...

                                               

ینگ اٹلی

ینگ اٹلی اطالوی نوجوانوں کے لیے ایک سیاسی تحریک تھی جو 1831 میں جوزیپی مازینی نے قائم کی تھی۔ اٹلی چھوڑنے کے کچھ مہینوں کے بعد ، جون 1831 میں ، مازینی نے سرڈینیا کے بادشاہ چارلس البرٹ کو ایک خط لکھا ، جس میں اس نے اٹلی کو متحد کرنے اور قوم کی رہن ...

                                               

افغان

افغان مختلف معنیٰ میں استعمال ہوتا ہے مثلاً افغانستان کے رہنے والوں کو افغان کہا جاتا ہے۔ جس میں پشتو بولنے والے اور فارسی بولنے والے دونوں شامل ہیں۔ فارسی بولنے والے پشتونوں کے لیے افغان کا لفظ استعمال کرتے ہیں انیسویں صدی اور بیسویں صدی میں آسٹ ...

                                               

افغانستان کا نام

افغانستان کے لغوی معنی افغانوں کی سرزمین کے ہیں۔ یہ لفظ افغان سے بنا ہے۔ تاریخی طور پر لفظ افغان کا اطلاق پشتون پر ہوتا ہے جو افغانستان کی سب سی بڑی نسلی آبادی ہے۔ افغانستان نام کا سب سے پہلا حوالہ دسویں صدی کی جغرافیہ کی کتاب حدود العالم میں ملت ...

                                               

بادشاہت مهربانیہ

مہربانی بادشاہی یا "بادشاہت مہربانیہ سیستان کے مقامی بادشاہوں کا ایک خاندان تھا جنہوں نے نمروز پر تین سو سال تک حکومت کی۔ یہبادشاہ صفاری خاندان سے تھے۔ ان کا دارالحکومت زرنج تھا۔ ان کی سرکاری زبان فارسی تھی۔

                                               

بادشاہت مھربانیہ

مہربانی بادشاہی یا بادشاہت مہربانیہ سیستان کے مقامی بادشاہوں کا ایک خاندان تھا جنہوں نے نمروز پر تین سو سال تک حکومت کی۔ یہ بادشاہ صفاری خاندان سے تھے۔ ان کا دار الحکومت زرنج تھا۔ ان کی سرکاری زبان فارسی تھی۔

                                               

تاریخ افغانستان

افغانستان میں پچاس ہزار سال پہلے بھی انسانی آبادی موجود تھی اور اس کی زراعت بھی دنیا کی اولین زراعت میں شامل ہے۔ سن 2000 قبل مسیح میں آریاؤں نے افغانستان کو تاراج کیا۔ جسے ایرانیوں نے ان سے چھین لیا۔ اس کے بعد یہ عرصہ تک سلطنت فارس کا حصہ رہا۔ 32 ...

                                               

تاریخ یمینی

تاریخ یمینی جو تاریخ عتبی کے نام سے بھی معروف ہے، عربی کی ایک کتاب جو ابو منصور ناصر الدین سبکتگین اور محمود غزنوی کے احوال و ادوار حکومت کی تاریخ اور وقائع پر مشتمل ہے۔ نیز اس میں پانچویں صدی ہجری تک ایران کی تاریخ بھی ذکر کی گئی ہے۔ یہ کتاب ابو ...

                                               

حبیب اللہ کلکانی

بچہ_سقہ: #عروج_و_زوال_کی_تاریخ تعارف: بچہ سقہ کا اصل نام جبیب اللہ تھا اسکے باپ کانام کریم اللہ جبکہ دادا کانام عظیم اللہ تھا. بجہ سقہ افغانستان کے علاقہ کلکان کا رہائیشی اور نسلی اعتبار سے تاجک تھا، اس وجہ سے تاریخ میں اسے حبیب اللہ کلکانی کے نا ...

                                               

درانی سلطنت

درانی سلطنت جسے آخری افغان سلطنت بھی کہا جاتا ہے احمد شاہ درانی کی سربراہی میں 1747ء قائم ہوئی اس کا دارالحکومت قندھار تھا۔