ⓘ Free online encyclopedia. Did you know? page 220




                                               

خیر الدین بارباروس

خیر الدین پاشا بارباروس ایک ترک قزاق تھا جو بعد ازاں سلطنت عثمانیہ کی بحری افواج کا سربراہ مقرر ہوا اور کئی دہائیوں تک بحیرہ روم میں اپنی طاقت کی دھاک بٹھائے رکھی۔ وہ یونان کے جزیرہ مڈیلی میں پیدا ہوا۔ اس کا انتقال استنبول میں ہوا۔ اس کا اصل نام ...

                                               

لوئی چودہواں

لوئی چودھواں فرانس اور نوارے کا بادشاہ تھا۔ 14 مئی ؁ 1643ء سے موت تک بادشاہ کے عہدے پر فائز رہا۔ اس کی مدّتِ بادشاہت 72 سال، 3 ماہ، 18 دِن تک رہی۔ وہ بادشاہِ آفتاب کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔ دراصل وہ اپنے وزیرِ اعظم جول مزارین کی موت کے بعد 1661 ...

                                               

نپولین

نپولیون بوناپارٹ یا نپولیون اول فرانس کا سپہ سالار اور سمراٹ تھا۔ اس کی زیر قیادت فرانسیسی فوجوں نے بہت سارے یورپی علاقوں پر قبضہ کیا بالآخر اسے شکست ہوتی ہے اور اسے ایک جزیرئے پر قید کر دیا جاتا ہے۔ جہاں وہ مر جاتا ہے۔

                                               

والری جسکار دایستان

والری جسکار دایستان یا جسکار دایستان فرانسیسی سیاست دان تھے جنہوں نے 1974ء سے 1981ء تک فرانس کے صدر کی حیثیت سے خدمات انجام دیا۔ کوبلنز جرمنی میں پیدا ہوئے۔ پیرس یونیورسٹی میں تعلیم حاصل کی۔ 1952ء مں محکمۂ مالیات میں ملازم ہو گئے۔ 1954ء میں محکمۂ ...

                                               

انگریز شاہی حکمرانوں کی فہرست

یہ انگریز شاہی حکمرانوں کی فہرست ہے۔ روایتی طور پر الفریڈاعظم کو مملکت انگلستان کا بانی تصور کیا جاتا ہے۔ جبکہ ملکہ آن انگلستان کی آخری ملکہ تھی جو مملکت انگلستان اور مملکت سکاٹ لینڈ ضم ہو کر مملکت برطانیہ عظمی بنی اور یوں ملکہ آن پہلی برطانوی مل ...

                                               

جیمز ششم اور اول

جیمز ششم اور اول اسکاٹ لینڈ، انگلستان اور آئرلینڈ کا بادشاہ تھا۔ بطور جیمز ششم 24 جولائی 1567ء سے وہ سکاٹ لینڈ کا بادشاہ جبکہ بطور جیمز اول وہ 24 مارچ 1603ء سے اپنی وفات تک وہ انگلستان اور آئر لینڈ کا بادشاہ بھی تھا۔ جیمز اول 1566۔1625ء میری ملکہ ...

                                               

رچرڈ اول شاہ انگلستان

رچرڈ اول 6 جولائی، 1189ء سے اپنی وفات تک انگلستان کا بادشاہ تھا۔ انہوں نے مختلف اوقات میں اسی مدت کے دوران میں نارمنڈے ،Aquitaine ،گاسکونی کے ڈیوک، آئر لینڈ، قبرص کے لارڈ، نینتز، آنجو، مائن کے نواب اور Brittany کے سردار اعلیٰ کے طور پر حکومت کی۔ ...

                                               

رچرڈ دوم شاہ انگلستان

رچرڈ دوم جسے بورڈو کا رچرڈ بھی کہا جاتا ہے 1377ء سے شاہ انگلستان تھا حتی کہ اسے 30 ستمبر 1399ء کو معزول کر دیا گیا۔

                                               

رچرڈ سوم شاہ انگلستان

Portraits of Richard III بذریعہ r3.org آرکائیو شدہ، with commentary by Pamela Tudor-Craig کرلی ڈی موز پر مبنی پر رچرڈ سوم شاہ انگلستان Richard III: History and Discovery on Medieval Archives Podcast Facial reconstruction of Richard III BBC websit ...

                                               

فیلیپ دوم شاہ ہسپانیہ

فیلیپ دوم ہسپانیہ کا 1556ء سے 1598ء تک اور پرتگال کا 1581ء سے 1598ء تک بادشاہ تھا۔ 1554ء سے وہ صقلیہ اور ناپولی کا بادشاہ اور میلان کا ڈیوک بھی تھا۔ میری اول سے شادی کے دوران وہ انگلستان اور آئر لینڈ کا بادشاہ بھی تھا۔ 1555ء سے وہ نیدرلینڈ کے ستر ...

                                               

لیڈی جین گرے

لیڈی جین گرے جسے نو دن کی ملکہ بھی کہا جاتا ہے ایک انگریزی معزز عورت تھی اور جولائی 10 سے 19 جولائی 1553 تک انگلستان کی فی الحقیقت حکمران تھی۔ اسے بعد میں سزائے موت دے دی گئی۔ وہ ہنری ہفتم کی پڑپوتی تھی۔ لیڈی جین گرے نے بہترین انسانی تعلیم حاصل ک ...

                                               

میری اول ملکہ انگلستان

میری اول جولائی 1553ء سے 17 نومبر 1558ء اپنی موت تک انگلستان اور آئرلینڈ کی ملکہ تھی۔ پروٹسٹنٹ طبقہ پر خلاف شدید مظالم کے لیے اسے بعد از مرگ بلڈی میری کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔

                                               

ولیم سوم شاہ انگلستان

ویلیم سوم پیدائش سے ہی پرنس آف اورنج تھے۔ انگلستان کے بادشاہ کی حیثیت سے وہ ویلیم 2 کے نام سے جانے جاتے تھے۔ وہ شمالی آئر لینڈ کے بادشاہ کے طور پر بھی اپنے فرائض انجام دیتے رہے۔ ویلیم کو پرنس آف اورنج کا عہدہ اپنے والد محترم کے نس سے ملا۔ اس کے و ...

                                               

چارلس اول شاہ انگلستان

چارلس اول تین مملکتوں انگلستان، سکاٹ لینڈ اور آئرلینڈ کا 27 مارچ 1625ء سے 1649ء میں اپنی سزائے موت تک بادشاہ تھا۔ انگریزی خانہ جنگی کے عروج پر چارلس اول کو سزائے موت دی گئی اور اولیور کرامویل دولت مشترکہ ریپبلکن کے قیام تحت پہلا لارڈ محافظ بنا۔ ر ...

                                               

ہنری پنجم شاہ انگلستان

ہنری پنجم شاہ انگلستان تھا جس نے 1413ء سے 1422ء میں اپنی موت تک حکومت کی۔ وہ خاندان لنکاسٹر کا دوسرا بادشاہ تھا۔ شارل ششم اپنے بیٹے شارل ہفتم کو 1420ء میں عاق کر دیا تھا اور ہنری پنجم اور اس کے ورثاء کو تاج فرانس کا جائز جانشین قرار دے دیا تھا۔ ا ...

                                               

ہنری ہشتم شاہ انگلستان

ہنری ہشتم انگلستان کا 21 اپریل 1509ء سے اپنی وفات تک بادشاہ تھا۔ وہ پہلے آئرلینڈ کا لارڈ اور بعد میں بادشاہ بھی تھا۔ اپنی چھ شادیوں کے علاوہ ہنری ہشتم کلیسائے انگلستان کو رومن کیتھولک سے الگ کرنے میں اپنے کردار کے لیے مشہور ہے۔

                                               

جگمے کھیسر نامگیال وانگچوک

جگمے کھیسر نامگیال وانگچوک سلطنت بھوٹان کے پانچویں بادشاہ یا ڈریگن بادشاہ ہیں۔ انہوں نے بھارت اور برطانیہ میں تعلیم حاصل کی اور وہ سنہ 2006ء میں اپنے والد کی بادشاہت سے علاحدگی کے بعد ملک کے بادشاہ بنے۔ ان کا شمار دنیا کے کم ترین بادشاہوں میں کیا ...

                                               

پارک گیئون ہائے

پارک کی پیدائش 2 فروری، 1952ء کو ڈونگ آف جنگ -گو ٹےگو، جنوبی کوریا میں ہوئی تھی۔ ان کے والد پارک چونگ ہی، جنوبی کوریا کے تیسرے صدر 1963ء سے 1979ء تک تھے۔ وہ اپنے والد کی پہلی اولاد ہیں اور غیر شادی شدہ ہیں۔

                                               

کم ڈے ژونگ

نوبل انعام یافتہ جنوبی کوریائی صدر۔ 6 جنوری، 1924ء کو پیدا ہوئے۔ زندگی کے ابتدائی دور میں کلرکی کا پیشہ اختیار کیا۔ بعد میں سیاست کی طرف رجوع کیا اور 1961ء میں پہلی مرتبہ اسمبلی کے رکن بنے۔ بعد میں ملک کی آمریتوں کے خلاف لڑتے رہے۔ وہ اپنے اوپر ہو ...

                                               

جوہر دودائیف

جوہر موسائیوچ دودائیف ایک سویت ایئر فورس جنرل اور چیچن رہنما تھے۔ وہ شمالی قفقاز میں روس کے علیحدگی اختیار کرنے والی ریاست چیچن جمہوریہ اشکیریہ کے پہلے صدر تھے۔

                                               

چوگیال

چوگیال /> موجودہ ہندوستان میں سکم اور لداخ کی سابقہ ریاستوں کے بادشاہ تھے ، جن پر نامگیال خاندان کی علاحدہ شاخوں کا راج تھا۔ چوگیال 1642 سے 1975 تک سکم کا مطلق العنان بادشاہ تھے ، بادشاہت کا خاتمہ تب ہوا جب اس کے لوگوں نے سکم کو ہندوستان کی 22 ...

                                               

حلیمہ یعقوب

حلیمہ یعقوب سنگاپور کی سیاست دان اور اس کی موجودہ صدر ہیں۔ وہ سنگاپور کی حکمران سیاسی جماعت پیپلز ایکشن پارٹی کی رکن تھیں۔ نیز جنوری 2013ء سے اگست 2017ء تک سنگاپور کی پارلیمنٹ کی نویں سپیکر کے عہدہ پر بھی فائز رہ چکی ہیں۔ 14 ستمبر 2017ء کو حلیمہ ...

                                               

میخائل گورباچوف

میخائل گورباچوف سویت یونین کے سابق صدر تھے وہ 1985ء سے 1991ء تک صدر رہے۔ ان کی وجہ شہرت اسلی تھی کہ انھوں نے سویت یونین کے زوال میں بنیادی کردار ادا کیا تھا۔

                                               

خالد بن عبدالعزیز آل سعود

پیدائش: 1913ء انتقال: 1982ء سعودی عرب کے بادشاہ۔ جلالۃ الملک سلطان خالد بن عبد العزیز آل سعود ریاض میں پیدا ہوئے۔ سعودی عرب کے اعلی دینی مدارس میں تعلیم پائی۔ نوجوانی میں شاہ عبدالعزیز کی زیر قیادت کئی جنگی مہموں میں حصہ لیا۔ 1934ءمیں اپنے بڑے بھ ...

                                               

سعود بن عبدالعزیز آل سعود

ابن سعود کے بعد ان کے بڑے صاحبزادے سعود بن عبد العزیز آل سعود تخت نشین ہوئے۔ انہوں نے اپنے والد کے شروع کیے گئے ترقیاتی کاموں کو جاری رکھا۔ ان کے زمانے میں تیل سے ہونے والی آمدنی میں مزید اضافہ ہوا جس سے ترقیاتی کاموں کی رفتار میں مزید اضافہ ہوا۔ ...

                                               

عبد العزیز بن عبد الرحمن آل سعود

نجد کا سعودی خاندان انیسویں صدی کے آغاز میں جزیرہ نمائے عرب کے بہت بڑے حصے پر قابض ہو گیا تھا لیکن مصری حکمران محمد علی پاشا نے آل سعود کی ان حکومت کو 1818ء میں ختم کر دیا تھا۔ سعودی خاندان کے افراد اس کے بعد تقریباً 80 سال پریشان پھرتے رہے یہاں ...

                                               

عبداللہ بن عبدالعزیز آل سعود

شاہ عبد اللہ ، سعودی عرب کے چھٹے بادشاہ تھے، 1 اگست 1924 کو پیدا ہوئے اور 23 جنوری 2015 کو وفات پاگئے۔شاہ فہد کے وفات کے بعد آپ شاہی تخت پر یکم اگست 2005 کو بیٹھے۔ فورب میگزین کے مطابق آپ دنیا کے آٹھویں طاقتور ترین انسان تھے۔

                                               

فہد بن عبدالعزیز آل سعود

فہد بن عبد العزیز آل سعود سعودی عرب کے فرمانروا۔ امریکا کے اہم اتحادی اور ہم نوا۔ 1975 میں ولی عہد بننے سے پہلے سعودی عرب کے وزیر تعلیم رہے۔ 1982 میں اپنے بھائی شاہ خالد کی وفات کے بعد سعودی کے بادشاہ مقرر ہوئے۔ خلیج کی جنگ میں عراق کے خلاف امریک ...

                                               

کم جونگ اون

کم جونگ اون شمالی کوریا کا ڈکٹیٹر ہے۔ اپنے باپ کم جونگ ال کی وفات کے بعد 2011ء میں شمالی کوریا کا اقتدار سنبھالا۔ کم جونگ-اون کے دادا شمالی کوریا کے بانی تھے۔

                                               

خلیفہ بن زاید آل نہیان

خلیفہ بن زاید آل نہیان ، جنہیں عمومی طور پر شیخ نہیان یا شیخ خلیفہ کے نام سے پکارا جاتا ہے، متحدہ عرب امارات کے موجودہ صدر اور ابوظہبی کے امیر ہیں۔ اپنے والد زاید بن سلطان آل نہیان کی وفات کے بعد انہیں یہ دونوں عہدے 3 نومبر، 2004ء کو ملے، گو کہ و ...

                                               

زاید بن سلطان آل نہیان

زاید بن سلطان آل نہیان ابوظبی کے امیر اور متحدہ عرب امارات کی تشکیل دینے میں مرکزی کردار ادا کرنے والے ہیں۔ وہ متحدہ عرب امارات کے پہلے صدر بھی ہیں۔

                                               

سہالے ورک زیوڈے

سہالے ورک زیوڈے ایک ایتھوپیائی سفارت کار، جو موجودہ صدر ایتھوپیا ہیں اور صدر بننے والی وہ پہلی خاتون ہیں۔ انہیں 25 اکتوبر 2018ء کو ایتھوپیا کے ارکانِ پارلیمان نے صدر چُنا۔ سہالے ورک پہلے سفارت کار رہ چکی ہیں، افریقن یونین میں سیکرٹری جنرل اقوام م ...

                                               

نورسلطان نظربایف

نور سلطان ابیشولی نظربایف ایک قازقستانی سیاست دان ہیں جو 24 اپریل 1990ء سے اپنے استعفی 19 مارچ 2019ء تک قازقستان کے صدر رہے۔ سنہ 1989ء میں قازق سوویت اشتراکی جمہوریہ کی کمیونسٹ پارٹی کے پہلے معتمد نامزد ہوئے اور سنہ 1991ء میں سوویت اتحاد سے قازقس ...

                                               

تمیم بن حمد آل ثانی

شیخ تمیم بن حمد آل ثانی ریاست قطر کے آٹھویں اور موجودہ امیر ہیں۔ وہ 25 جون 2013 کو اپنے والد کے امیر قطر کے عہدہ سے دستبردار ہونے کے بعد قطر کے امیر منتخب ہوئے۔ وہ سابق امیر قطر، شیخ حمد بن خلیفہ الثانی کے چوتھے بیٹے ہیں۔ امیر منتخب ہونے سے پہلے ...

                                               

جاسم بن محمد الثانی

جاسم بن محمد الثانی ، قاسم بن ثانی اور قاسم بن محمد الثانی یا "بانی", کے نام سے بھی معروف ہیں۔ وہ جدید قطر کے بانی تھے۔ ان کی زوجہ کا نام دستیاب نہیں ہے لیکن ان کے 19 بچے تھے جو سب کے سب بیٹے تھے۔،

                                               

حمد بن خلیفہ آل ثانی

شیخ حمد بن خلیفہ آل ثانی (عربی: الشيخ حمد بن خليفة آل ثاني کا قطر میں بر سر اقتدار الثانی خاندان سے تعلق ہے۔ وہ 1995 سے 2013 تک قطر کے امیر رہے۔ انہوں نے 1995ء میں اس وقت اقتدار پر قبضہ کیا جب ان کے والد اور اس وقت کے امیر قطر بیرونی دورہ پر تھے۔ ...

                                               

خلیفہ بن حمد الثانی

امیر شیخ خلیفہ بن حمد بن عبد اللہ بن جاسم بن محمد الثانی‘‘‘ 27 فروری 1972 سے 27 جون 1995 تک قطر کے امیر تھے۔ 27 جون 1995ء کو ان کے بیٹے حمد بن خلیفہ الثانی نے ان کی حکومت کا تختہ الٹ دیا اور خود قطر کا حکمران بن گیا۔

                                               

عبداللہ بن جاسم الثانی

عبد اللہ بن جاسم بن محمد الثانی ، جو شیخ عبد اللہ بن جاسم الثانی کے نام سے بھی معروف ہیں قطر کے دار الحکومت دوحہ میں 1880ء میں پیدا ہوئے۔ آپ 17 جولائی 1913ء کو قطر کے حکمران بنے۔

                                               

محمد بن ثانی الثانی

شیخ محمد بن ثانی ، محمد بن ثانی بن محمد الثمیر ، اپنے والد شیخ ثانی بن محمد الثمیر کے بعد جزیرہ نما قطر کے دوسرے امیر تھے۔ وہ انیسویں صدی میں عثمانی فوج کو شکست دینے والے اور قطر کے بانی شیخ جاسم بن محمد الثانی کے والد کی حیثیت سے زیادہ معروف ہیں۔

                                               

محمد بن جاسم الثانی

شیخ محمد بن جاسم بن محمد الثانی یا مختصرا، محمد بن جاسم الثانی 1913 سے 1914 تک کے قطر کے چوتھے امیر تھے۔ وہ اپنے بھائی شیخ عبداللہ بن جاسم الثانی کے حق میں تخت سے دستبردار ہو گئے۔

                                               

ملکہ وکٹوریہ

وکٹوریہ کے دیگر استعمالات کے لیے دیکھیے وکٹوریہ ملکہ وکٹوریہ پیدائش: 24 مئی 1819ء– وفات: 22 جنوری 1901ء سلطنت برطانیہ کی ملکہ تھی۔ ملکہ وکٹوریہ انیسویں صدی عیسوی میں دنیا کی با اثر ترین حکمرانوں میں شمار کی جاتی ہیں۔ ملکہ وکٹوریہ کا شمار برطانیہ ...

                                               

البیغ دوم، شہزادہ موناکو

Portrait of Albert II of Monaco – The postage stamp of Monaco, Office des Emissions de Timbres Poste de Monacoآرکائیو شدہ بذریعہ oetp-monaco.com Princely House of Monacoآرکائیو شدہ بذریعہ palais.mc Albert II of Monaco, the unknown prince, آرکائیو ...

                                               

نواف الاحمد الجابر الصباح

نواف الاحمد الجابر الصباح 30 ستمبر 2020ء کو کویت کے امیر اور کویتی افواج کے سربراہ بنے۔ وہ 29 ستمبر 2020ء کو اپنے بھائی صباح الاحمد الجابر الصباح کی وفات کے بعد تخت نشین ہوئے۔ نواف کو 7 فروری 2006ء کو ولی عہد شہزادہ نامزد کیا گیا تھا۔

                                               

قلعہ الموت

قلعہ الموت بحیرہ قزوین کے نزدیک صوبہ قزوین، ایران میں ایک پہاڑی قلعہ تھا۔ یہ موجودہ تہران، ایران سے قریبا 100 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔ اسماعیلی فرقے کے حسن الصباح کی قیادت میں یہ دہشت پسند اور خفیہ جماعت حشاشین کا مرکز رہا۔ اس جماعت کا خاتمہ ہلاکو ...

                                               

10 ڈاؤننگ اسٹریٹ

10 ڈاؤننگ اسٹریٹ مملکت متحدہ میں اسے صرف نمبر 10 بھی کہا جاتا ہے حکومت برطانیہ کا صدر دفتر ہے۔ اٹھارہویں اور انیسویں صدی کے بیشتر حصوں اور مستقل طور پر 1905ء سے یہ مملکت متحدہ کے وزیر اعظم کے زیر استعمال رہا ہے۔ یہ ویسٹ منسٹر شہر، لندن، انگلستان ...

                                               

صدارتی محل (نانجنگ)

صدارتی محل عوامی جمہوریہ چین صوبے جیانگسو کے دار الحکومت شہر نانجنگ میں 1927ء سے 1949ء میں دار الحکومت تائپے میں منتقل ہونے تک جمہوریہ چین کے صدر کی رہائش گاہ اور دفتر تھا۔ اب اسے جدید چینی تاریخ کا عجائب گھر یا چین جدید تاریخ عجائب گھر کہا جاتا ...

                                               

عوام کا تالار عظیم

عوام کا تالار عظیم چین کی ایک سرکاری عمارت ہے جو بیجنگ کے مغربی علاقہ میں تائینا نیم چوک کے کنارے پر واقع ہے۔اس عمارت کو حکومت عوامی جمہوریہ چین اور حکمران چینی کمیونسٹ پارٹی اپنے اجلاس اور تقاریب کے لیے استعمال کرتی ہیں۔ اسی عمارت میں قومی عوامی ...

                                               

شندور

چترال کے نقشے پر شندور مشرق کی سمت میں واقع ہے۔ طبعی لحاظ سے شندور چھ حصوں پر مشتمل ہے۔ پہلا حصہ غوچھار کہلاتا ہے۔دوسرا حصہ زنگیان شال کے نام سے پہچانا جاتا ہے۔ تیسرا حصہ جھیل کے اطراف کا میدانی علاقہ ہے جو جسے پنجی لشٹ کہتے ہیں چوتھا حصہ مڑان شا ...

                                               

سفارت خانہ آذربائیجان، اسلام آباد

سفارت خانہ آذربائیجان پاکستان میں آذربائیجان کے سفارتخانہ کے طور پر استعمال ہونے والا ایک سفارتی مشن ہے جس کے تحت پاکستان اور آذربائیجان کے مابین سیاسی، سماجی، معاشی تعلقات اور دوستانہ تعلقات کی خاطر دوطرفہ سفراء کا تعین کیا جانا لازم ہے۔ یہ سفار ...

                                               

اسرائیل کینیڈا تعلقات

KAIROS نامی خیراتی ادارے کو کینیڈا کی سرکار سے ملنے والی امداد پر سٹیفن ہارپر کی حکومت نے 2009ء میں پابندی لگا دی کیونکہ ان پر اسرائیل مخالفت کا الزام تھا۔ 2010ء میں اسرا-کانڈیا دوستی ڈاک ٹکٹ کا اجرا اور اسرائیلی راہنماء کا کینیڈا معتبری دورہ پال ...