Back

ⓘ زمین




                                               

افق حقیقی

                                               

کیا زمیں گھومتی ہے

                                               

معدنیات کی تعریف

                                               

قصبہ ادری اور حافظ ملت

قصبہ ادری ہندوستان کے صوبہ اترپردیش کے ضلع مئو کا ایک قصبہ ہے۔ جو شہر مئو ناتھ بھنجن سے تقریبا آٹھ کلو میٹر مشرق - شمال کی جانب آباد ہے۔ ضلع مئو کا عالمی شہرت یافتہ قصبہ مدینة العلماء گھوسی قصبہ ادری سے چند کلو میٹر دور مغرب - شمال کی جانب واقع ہے۔ اس میں کوئی دو رائے نہیں کہ یہ قصبہ صدیوں پہلے سے آباد ہے۔ لیکن یہ قصبہ کب آباد ہوا؟ اس کا مؤسس اول کون ہے؟ اس کا جواب نہ ہی تاریخ ہند کے صفحات میں ملتا ہے اور نہ ہی کسی مستند دستاویز کے ذریعے سے۔ البتہ شیخ الحدیث علامہ ڈاکٹر عاصم اعظمی صاحب حفظہ اللہ کی لکھی کتاب "حضرت مولانا مفتی مجیب الاسلام نسیم اعظمی کے احوال و افکار" کے مقدمہ سے اتنا ضرور ...

                                               

تعجب

تعجب یا چونکنا ایک دماغی اور جسمانی کیفیت ہے جو اکثر انسانوں اور جانوروں میں کسی غیر متوقع واقعے کے نتیجے میں ہوتا ہے۔ چونکنے کی شدت مختلف ہو سکتی ہے: یعنی یہ غیر جذباتی / معتدل چونکنا ہو سکتا ہے، اداسی چھاتے ہوئے چونکنا ہو سکتا ہے، کبھی یہ کسی خوش خبری کی وجہ سے ہو سکتا ہے۔ اس طرح یہ منفی، مثبت یا غیر جانب دارانہ جذبہ ہو سکتا ہے۔ تعجب کی اثر انگیزی بھی حسب موقع جدا گانہ ہو سکتی ہے، جیسے کہ بہت ہی زیادہ تعجب، جس میں یا تو کوئی شخص خوشی سے پاگل ہو سکتا ہے، انتہائی جنگ جویانہ فطرت کا مظاہرہ کر سکتا ہے یا ماحول سے وہ دور بڑی تیزی سے جانے کی کوشش کرتا ہے۔ کچھ مواقع پر لوگوں میں تعجب کم ہوتا ہے ...

                                               

زہریلاپن

زہریلاپن کسی کیمیاوی مادے یا دیگر مادوں کے آمیزوں کی اس صلاحیت کو کہا جاتا ہے جس سے کسی جان دار شے کو ضرر پہنچ سکتا ہے۔ یہ زہریلاپن کا اطلاق کسی مکمل جان دار پر ہو سکتا ہے جیسے کہ جانور، جراثیم یا درخت۔ اس کے علاوہ کسی مخصوص عنصر کے لیے مضرت کا بھی حساب لیا جا سکتا ہے، جیسے کہ کوئی مادہ انسانی گردے یا دل کے لیے نقصان دہ ہو، اگر چیکہ دیگر اعضا کے لیے راست طور پر مضر نہ ہو۔

                                               

عبدالرشید (زرعی سائنسدان)

عبدالرشید ڈاکٹر عبدالرشید 4 اپریل 1050ء کو پاکستان کے شہر فیصل آباد کے گاؤں سدھار میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے امریکا کی ریاست ہوائی میں واقع یونیورسٹی آف ہوائی ایٹ مینوا سے پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ آپ 2008 سے 2011 تک پاکستان جوہری توانائی کمیشن کے رکن رہ چکے ہیں۔ اس سے قبل 2006 سے 2008 تک پاکستان کے پاکستان زرعی تحقیقاتی کونسل کے ڈائریکٹر جنرل بھی رہ چکے ہیں۔

                                               

شیخ ادیبالی

شیخ ادیبالی ، وہ اخی تنظیم کے ایک انتہائی با اثر عثمانی سنی شیخ تھے جنھوں نے ترقی پذیر عثمانی ریاست کی پالیسیاں تشکیل دینے میں مدد کی۔ سلطنت عثمانیہ کے قیام کے بعد وہ اس کے پہلے قاضی بنے۔ وہ شمالی عرب قبیلےبنو تمیم سے تعلق رکھتے تھے اور نسب کے لحاظ سے سید تھے۔

                                               

ہیری اینڈ ہس بکٹ فل آف ڈایناسورز

ہیری اینڈ ہس بکٹ فل آف ڈایناسور ایک امریکی اینیمیٹڈ ٹیلی ویژن سیریز ہے جسے ٹیلیٹن کے لیے ایان کیوں نے تخلیق کیا۔

                                               

جمال احسانی

جمال احسانی روزنامہ ’’حریت‘، روزنامہ’’سویرا‘‘ اور ’’اظہار‘‘ کراچی سے بھی وابستہ رہے جہاں انھوں نے معاون مدیر کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔ اپنا پرچہ ’’رازدار‘‘ بھی نکالتے رہے۔وہ معاشی طور پر بہت پریشاں رہے۔

                                               

کانٹرفیٹ کٹ

کانٹرفیٹ کٹ ایک برطانوی - کینیڈا کا متحرک ٹیلی ویژن سیریز ہے جو آرڈ مین انیمیشن ، کرسٹینا فیومارا اور بین مارسوڈ نے تیار کیا ہے۔

                                               

لورا اسٹار

لورا اسٹار ایک 2004 میں جرمن اینی میٹڈ فیچر فلم ہے جسے تیلو روتکیرچ نے پروڈیوس کیا اور اس کی ہدایتکاری کی۔ یہ بچوں کی کتاب لورس اسٹرن از کلاؤس بومگارٹ پر مبنی ہے۔

                                               

خواجہ محمد محمود تونسوی

خواجہ محمد محمود تونسوی کی ولادت 27/شعبان المعظم 1281ھ بمطابق 26/جنوری 1865ء تاریخ تولد حضرت خواجہ محمد محمود بحساب قمری 27/شعبان المعظم 1281ھ بحساب شمسی 14/مانگھ 1921بکرمی بحساب عیسوی 26/جنوری 1865ء

                                               

قلعہ میر گڑھ

قلعہ میر گڑھ صوبہ پنجاب کے ضلع بہاونگر کی تحصیل فورٹ عباس سے تقریباً 15 کلومیٹر کے فاصلے پرواقع ہے۔ جام خان کے بیٹے نور محمد خان نے1799ء میں اس قلعہ کی تعمیر شروع کی تھی اور1803ء میں اس قلعہ کو مکمل کیا۔ اس قلعہ کا بیرونی حصہ پختہ، ایک داخلی دروازہ اور چار مینار تھے۔ داخلی دروازے کے دو حصے تھے، بیرونی دروازے پر لوہے کی سلاخیں منڈھی ہوئی تھیں، پھر اندر ڈیوڑھی تھی اس کے بعد اندر کا دروازہ تھا۔ قلعہ کے صحن میں رہائشی مکانات تھے، صحن میں دو میٹھے پانی کے کنویں تھے جو اب خشک ہوکر بھر گئے ہیں۔ اس وقت قلعہ کی فصیل بالکل شکستہ حالت میں ہے۔ اندر کے مکانات مٹی کا ڈھیر بن گئے ہیں۔ اس قلعے کی اونچی دی ...

                                               

فلسطین لہولہان

سر زمین فلسطین ایک مرتبہ پھر لہو لہان ہے۔اسرائیل کی صہیونی حکومت نے ایک مرتبہ پھر اپنی درندگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مظلوم فلسطینی عوام یہاں تک کہ خواتین اور بچوں کو بھی اپنی دہشت گردی کا نشانہ بنایا ہے۔تازہ ترین اطلاعات کے مطابق اب تک 200 سے زیادہ بے گناہ لوگوں کو شہید کر دیا ہے۔صہیونی حکومت کی جانب سے مظلوم فلسطینی عوام پر ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف دنیا مظاہرے اور احتجاجی جلوس نکالے جا رہے ہیں اور اسرائیل کی صہیونی حکومت کی پر زور مذمت کی جارہی اس سلسلے میں گذشتہ کئی دنوں سے مسلسل پاکستان کے مختلف چھوٹے بڑے شہروں میں پاکستان مختلف دینی مذہبی،سیاسی اور سماجی تنظیموں کی طرف سے مظاہروں کا ...

                                               

کرپٹو دی سپرڈاگ

کرپٹو دی سپرڈاگ ایک امریکی بچوں کا متحرک ٹیلی ویژن سیریز ہے جو وارنر بروس انیمیشن کے ذریعہ تیار کیا گیا ہے ، یہ سپرمین کے کائین ساتھی کرپٹو پر مبنی ہے ، جس کا پریمیئر کارٹون نیٹ ورک پر 25 مارچ 2005 کو ہوا تھا ، اور اگلے سال ستمبر 23 ، 2006 سے کڈز ڈبلیو بی پر نشر کیا گیا تھا۔ 39 قسطیں تیار کی گئیں۔

                                               

واگی

واگی: یہ ذات دریا ستلج ہے ،ان کے علاقے میں زیادہ تر گندم، کپاس، سورج مکھی،سفید تل،مکئی ،کالے تل،پیاز،لہسن اور تمام قسم کی سبزیاں وغیرہ)کاشت ہوتی ہیں، اس کے علاوہ فروٹ میں کنو، مالٹا،امبرود،کیلا،آم،لیموں،انار،تربوز،خربوزہ،کھجور،وغیرہ کے درخت عام ہیں۔ سرائیکی گوتیں وہ قبائل ہیں جنہیں نسلی سرائیکی قبائل کہا جاتا ہے۔ سرائیکی کے معنی ہیں، دریاؤں کے کناروں پر آباد مقامی لوگ یا دریاؤں کے کنارے پر کاشتکاری کرنے والے یا دریاؤں کی درمیانی خشک جگہ یا زمین پر آباد یا کاشتکاری کرنے والے باسی. نسلی سرائیکی ذاتیں یا سرائیکی گوتیں، سرائیکی خطے کے تمام اضلاع میں اکثریت سے موجود ہیں اور اپنے نام کے ساتھ ساب ...

                                               

دی فیئری اوڈ پیرینٹس

فیئری اوڈ پیرینٹس ایک دکھی 10 سالہ لڑکے کی کہانی سناتا ہے جس کا نام ٹِمی ٹرنر ہے جسے اپنے والدین نے نظرانداز کیا اور اپنے نینی وکی کے ذریعہ بدسلوکی کی۔ ایک دن ، اس کو دو پریوں کے خدا پرست ، کوسمو اور وانڈا دیے گئے ، جو اپنی دکھی زندگی میں بہتری لانے کی ہر خواہش کو قبول کرتے ہیں۔ تاہم ، یہ خواہشات عام طور پر بیک فائر ہوتی ہیں اور بہت ساری پریشانیوں کا سبب بنتی ہیں جن کو ٹممی کو ٹھیک کرنا ضروری ہے۔ اس سلسلے کی ابتدائی اقساط اپنے دوستوں ، چیسٹر اور اے جے اور کبھی کبھار اس کے والدین کے ساتھ گھر ، اسکول اور شہر میں کہیں اور اپنی روزمرہ کی زندگی کو نیویگیشن کرنے کی کوشش کرتے ٹیمی کے گرد گھوم رہی ...

                                               

رفیع رضا

#رجوع_مکرر رفیع رضآ، تاریخ پیدائش 9 اکتوبر 1962, ضلع جھنگ ، رفیع رضا کی شاعری پر مضامین ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جہان ِ حیرت کا مسافر ۔ رفیع رضا عرفان ستار۔۔۔۔ مجھے یہ کہنے میں کوئی باق نہیں کہ میں نے اب سے پہلے رفیع رضا کو پڑھنے کی طرح نہیں پڑھا تھا۔ اسی طرح پڑھا تھا جیسے فیس بک پر سب پڑھتے ہیں۔ ایک عرصے تک تو رفیع میری فرینڈز لسٹ میں بھی شامل نہیں تھا۔ مگر اس دوران میں وہ اپنی غزلوں کے لنک مجھے ای میل کرتا تھا اور میں ایک سرسری پڑھت کے بعد جو مناسب سمجھتا تھا، وہ رائے دے دیتا تھا۔ اللہ خیر صلا۔ مگر اس دوران بھی بحیثیت شاعر، میرے دل میں رفیع کی قدر و قیمت موجود تھی، مگر ا ...

                                               

لیٹس گو لونا!

لیٹس گو لونا! ایک متحرک ٹیلی ویژن سیریز ہے۔ اینیمیٹر جو مرے کے ذریعہ تخلیق کیا گیا تھا اور پیٹر ہنان نے تیار کیا تھا۔ یہ پی بی ایس بچوں کے لیے 9 اسٹوری میڈیا گروپ نے مشترکہ طور پر تیار کیا ہے۔

                                               

آسام معاہدہ

آسام معاہدہ حکومت ہند کے نمائندوں اور آسام تحریک کے رہنماؤں کے مابین طے پانے والا ایک معاہدہ تھا۔ اس پر 15 اگست 1985 کو نئی دہلی میں اس وقت کے وزیر اعظم راجیو گاندھی کی موجودگی میں دستخط کیے گئے تھے۔ بعد میں اگلے سال 1986 میں پہلی مرتبہ شہریت ایکٹ میں ترمیم کی گئی۔ اس کے بعد 1979 میں شروع ہونے والے ایک چھ سالہ آسام تحریک کا آغاز ہوا۔ آل آسام اسٹوڈنٹس یونین کی سربراہی میں ، مظاہرین نے تمام غیر قانونی غیر ملکیوں - خاص طور پر بنگلہ دیشی تارکین وطن کی شناخت اور ملک بدری کا مطالبہ کیا۔ انہیں ماضی کا خوف تھا اور ہجرت کا سلسلہ جاری رکھنا مقامی آبادی پر حاوی تھا ، جس سے ان کے سیاسی حقوق ، ثقافت ، ...

                                               

نیا صفحہ

21 دوسری صبح بلعام اٹھا اور اپنے گدھے پر زین رکھی۔ تب وہ مو آبی قائدین کے ساتھ گیا۔ 22 بلعام اپنے گدھے پر سوار تھا اس کے خادموں میں سے دو اس کے ساتھ تھے۔ جب بلعام سفر کررہا تھا خدا اس پر غصّہ میں آ گیا۔ اس لیے خداوند کا فرشتہ بلعام کے سامنے سڑک پر کھڑا ہو گیا۔ فرشتہ بلعام کو رو کنے جا رہا تھا۔ 23 بلعام کے گدھے نے خداوند کے فرشتہ کو سڑک پر کھڑا دیکھا۔ فرشتہ کے ہا تھ میں ایک تلوار تھی۔ اس لیے گدھا سڑک سے مُڑا اور کھیت میں چلا گیا۔ بلعام فرشتہ کو نہیں دیکھ سکتا تھا اس لیے وہ گدھے پر بہت غصّہ کیا۔ اس نے گدھے کو ما را اور اسے سڑک پر لوٹنے پر مجبور کیا۔ 24 بعد میں خداوند کا فرشتہ دوسری جگہ پر کھ ...

                                               

قوم زرغون خیل(آل اولاد سید علی ولد گلئی نیکہ ولد آدم نیکہ آدم خیل آفریدی)

حکومت پاکستان نے ایف سی آر قانون کے تحت درہ آدم خیل کے ذیلی قوم زرغون خیل کو کے زیر انتظام کل چھ سب سیکشن کندیوں میں تقسیم کیا تھا۔:کندی ملا خیل ،:کندی محمد خیل ،:کندی میری خیل ،:کندی شپولکی وال ،:کندی سنی خیل اور:کندی تلم خیل۔ قوم زرغون خیل کو درہ آدم خیل ایف آر کوہاٹ میں بطور سربراہقوم تصور کیا جاتا ہے اور اس کی آبادی بھی سب سے زیادہ ہے۔ اصل اہل قوم زرغون خیل صرف اور صرف آل اولاد کچئی ولد یار علی نیکہ ؒ آدم خیل آفریدی ہیں جبکہ مسمٰی کچئی ولد یار علی کی زوجہ محترمہ کا نام زرغونہ بی ہے۔مسمٰی کچئی نیکہ کی زوجہ زرغونہ بی کے بطن سے مسمٰی ملا نیکہ ؒ، مسمٰی محمد خان نیکہ اور مسمٰی میر خان نیکہ ...

                                               

تیندوے کا حملہ

تیندوے کا حملہ ایک جامع اصطلاح ہے جس کا اطلاق تیندووں کے انسانوں پر، دیگر تیندووں پر اور دوسرے جانوروں پر کیے گئے حملوں پر ہوتا ہے۔ تیندوے کے حملے کے اعداد و شمار جغرافی علاقے اور تاریخی دور کے حساب سے مختلف ہو سکتی ہے۔ حالاں کہ ذیلی صحارائی افریقا سے لے کر جنوب مشرقی ایشیا میں مختلف انواع کے تیندوے آباد ہیں، تاہم مسلسل حملوں کے واقعات صرف بھارت اور نیپال میں رپورٹ کیے گئے تھے۔ پانچ بڑی اقسام کی بلیوں میں تیندووں کے آدم خور بننے کا امکان بہت کم ہے۔ تاہم دوسرے جانوروں کا شکار کر کے گذر بسر کرنے والے جانوروں کے طور پر تیندوے انسانوں سے پہلے سے موجود ہیں اور وہ مغربی زیریں زمین گوریلا جیسے بل ...

                                               

آکس ٹیلز

آکس ٹیلز ایک ہالی ووڈ ٹیلی ویژن سیریز ہے۔ سبان انٹرٹینمنٹ کے تعاون سے ٹیلی کایبل بینیلکس بی وی اور کاسموس اسٹوڈیو کے ذریعہ تیار کردہ۔ یہ جاپان اور نیدرلینڈز کے مابین ایک ڈچ مزاحیہ پٹی بوس پر مبنی ایک مشترکہ پروڈکشن تھا جو ول ریمیکرز اور تھیجس ولیمز نے تیار کیا تھا۔ یہ سلسلہ جاپانی نیٹ ورک ٹی وی ٹوکیو پر 7 اپریل 1987 تا 29 مارچ 1988 تک جاری رہا۔

                                               

جنریٹر ریکس

جنریٹر ریکس ایک امریکی متحرک سائنس فکشن ٹیلی ویژن سیریز ہے۔ کارٹون نیٹ ورک کے مین آف ایکشن کے ذریعہ تخلیق کیا گیا ، جس میں کارٹون نیٹ ورک اسٹوڈیو کے جان فینگ نے نگران ہدایت کار کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔

                                               

موہبنگ (ٹی وی سیریز)

Disenchantment ایک امریکی بالغ تصوراتی متحرک سیت کام ہے جو نیٹ فلکس کے لیے میٹ گروننگ نے تیار کیا ہے۔ یہ سلسلہ گرومنگ کی پہلی پروڈکشن ہے جو خاص طور پر ایک محرومی سروس پر نمودار ہوتی ہے۔ اس سے پہلے اس نے فاکس براڈکاسٹنگ کمپنی کے لیے دی سمپسنز اور فوٹوراما بنائے تھے۔ قرون وسطی کے تصوراتی بادشاہی میں ڈریملینڈ کا آغاز ، اس سلسلے میں بین ، ایک سرکش اور شرابی شہزادی ، اس کی بولی میں شریک ساتھی ایلفو اور اس کے تباہ کن "ذاتی شیطان" لوسی کی کہانی ہے۔ ڈس ایینچینٹمنٹ میں ابی جیکبسن ، ایرک آندرے ، نٹ فیکسن ، جان ڈیمگیگیو ، ٹریس میک نیل ، میٹ بیری ، ڈیوڈ ہرمین ، مورس لا مارچے ، لسی مونٹگمری اور بلی ویس ...

                                               

دی گرم ایڈونچرز آف بلی اینڈ مینڈی

دی گرم ایڈونچرز آف بلی اینڈ مینڈی ایک امریکی متحرک ٹیلی ویژن سیریز ہے۔ میکسویل ایٹم برائے کارٹون نیٹ ورک اور چودہویں کارٹون کے ذریعہ تخلیق کیا گیا ، اگرچہ یہ گرم اینڈ ایول کا حصہ تھا۔

                                               

بہاؤ الدین شاہ خاکی

حضرةْ بَہاؤ الدینْ شاہ الھاشمي سہروردي معروف بہ خاکي شاہ بابا اٹھارویں صدی عیسوی میں سلسلۂ سہروردیہ کے معروف رُوحانی بزرگ اور مبلغ گذرے ہیں۔ آپ علوم ظاہری و باطنی میں منفرد مقام رکھتے تھے۔ آپ برصغیر کے عظیم روحانی پیشوا غوث العالم و شیخ الاسلام حضرةْ مخدوم بَہاؤ الدینْ زکریا سہروردي کے فرزند حضرةْ مخدوم صدر الدین عارف باللہ سہروردي کی نسل سے ہیں۔ آپ کا نام آپ کے جد مکرم کے نام پر رکھا گیا۔ آپ کے سنہ پیدائش و مقام سے متعلق مستند روایات موجود نہیں۔ البتہ قیاس ہے کہ آپکی پیدائش سترویں صدی کے آواخر میں ہوئی۔

                                               

آب و ہوا کا انصاف

موسمیاتی انصاف ایک اصطلاح ہے جو آب و ہوا کی تبدیلی کو اخلاقی اور سیاسی مسئلے کے طور پر مرتب کرنے کے لیے استعمال ہوتا ہے ، بجائے یہ کہ خالصتا ماحولیاتی یا جسمانی فطرت میں۔ یہ انصاف ، خاص طور پر ماحولیاتی انصاف اور سماجی انصاف کے تصورات سے وابستہ اور آب و ہوا کی تبدیلی کے اثرات سے وابستہ ہے۔آب و ہوا میں انصاف مساوات ، انسانی حقوق ، اجتماعی حقوق اور آب و ہوا کی تبدیلی کی تاریخی ذمہ داری جیسے تصورات کی جانچ پڑتال کرتا ہے۔موسمیاتی انصاف کے اقدامات میں بڑھتی ہوئی موسمیاتی تبدیلیوں کے معاملات پر قانونی کارروائی کا عالمی ادارہ شامل ہوسکتے ہیں۔2017 میں ، اقوام متحدہ کے ماحولیاتی پروگرام کی ایک رپور ...

زمین
                                     

ⓘ زمین

اگر آپ کسی اور صفحہ کی تلاش میں ہیں تو دیکھیں زمین

زمین نظام شمسی کا وہ واحد سیارہ ہے جہاں پر زندگی موجود ہے۔ پانی زمین کی 3­ / ­2 سطح کو ڈھکے ہوئے ہے۔ زمین کی بیرونی سطح پہاڑوں، ریت اور مٹی کی بنی ہوئی ہے۔ پہاڑ زمین کی سطح کا توازن برقرار رکھنے کے لیے بہت ضروری ہیں۔ اگر زمین کو خلا سے دیکھا جائے تو ہمیں سفید رنگ کے بڑے نشان نظر آئیں گے۔ یہ پانی سے بھرے بادل ہیں جو زمین کی فضا میں ہر وقت موجود رہتے ہیں۔ پچھلے چند سالوں سے ان بادلوں کی تعداد میں کمی آئی ہے جس کا اثر زمین کی فضا کو پڑا ہے۔ زمین کا صرف ایک چاند ہے۔ زمین کا شمالی نصف کرہ زیادہ آباد ہے جبکہ جنوبی نصف کرہ میں سمندروں کی تعداد زیادہ اور خشکی کم ہونے کی وجہ سے کم آبادی ہے، اِس کے علاوہ اور کئی وجوہات ہیں جیسے پچھلے دور میں اُن علاقوں کا کم جاننا وغیرہ۔ قطب شمالی اور قطب جنوبی پر چھ ماہ کا دن اور چھ ماہ کی رات رہتی ہے۔ عام دن اور رات کا دورانیہ چوبیس گھنٹے کا ہوتا ہے۔

                                     

1. تاریخ وار ترتیب

نظام شمسی میں پائے جانے والے قدیم ترین مواد کی تاریخ 4.5672 ± 0.0006 بلین سال قدیم ہے۔ آغاز میں زمین پگھلی ہوئی حالت میں تھی لیکن وقت گزرنے کے ساتھ زمین کی فضا میں پانی جمع ہونا شروع ہو گیا اور اس کی سطح ٹھنڈی ہو کر ایک قرشcrust کی شکل اختیار کر گئی۔ اس کے کچھ عرصہ بعد ہی چاند کی تشکیل ہوئی۔ سائنسدانوں کا خیال ہے کہ مریخ کی جسامت کا ایک جسم تھیا Theia، جس کی کمیت زمین کا دسواں حصہ تھی، زمین سے ٹکرایا اور اس تصادم کے نتیجے میں چاند کا وجود عمل میں آیا۔ اس جسم کا کچھ حصہ زمین کے ساتھ مدغم ہو گیا، کچھ حصہ الگ ہو کر خلا میں دور نکل گیا، اور کچھ الگ ہونے والا حصہ زمین کی ثقلی گرفت میں آگیا جس سے چاند کی تشکیل ہوئی۔

پگھلے ہوئے مادے سے گیسی اخراج اور آتش فشانی کے عمل سے زمین پر ابتدائی کرہ ہوا ظہور پذیر ہوا۔ آبی بخارات نے ٹھنڈا ہو کر مائع شکل اختیار کی اور اس طرح سمندروں کی تشکیل ہوئی۔ مزید پانی دمدار سیاروں کے ٹکرانے سے زمین پر پہنچا۔ اونچے درجہ حرارت پر ہونے والے کیمیائی عوامل سے ایک self replicating سالمہ molecule تقریباً 4 ارب سال قبل وجود میں آیا، اور اس کے تقریباً 50 کروڑ سال کے بعد زمین پر موجود تمام حیات کا جد امجد پیدا ہوا۔

ضیائی تالیف کے ارتقاء کے بعد زمین پر موجود حیات سورج کی توانائی کو براہ راست استعمال کرنے کے قابل ہو گئی۔ ضیائی تالیف سے پیدا ہونے والی آکسیجن فضاء میں جمع ہونا شروع ہو گئی اور کرہ ہوا کے بالائی حصے میں یہی آکسیجن اوزون ozone میں تبدیل ہونا شروع ہو گئی۔ چھوٹے خلیوں کے بڑے خلیوں میں ادغام سے پیچیدہ خلیوں کی تشکیل ہوئی جنھیں eukaryotes کہا جاتا ہے۔ آہستہ یک خلوی جانداروں کی بستیاں بڑی سے بڑی ہوتی گئیں، ان بستیوں میں خلیوں کا ایک دوسرے پر انحصار بڑھتا چلا گیا اور خلیے مختلف کاموں کے لیے مخصوص ہوتے چلے گئے۔ اس طرح کثیر خلوی جانداروں کا ارتقاء ہوا۔ زمین کی بالائی فضا میں پیدا ہونے والی اوزون ozone نے آہستہ زمین کے گرد ایک حفاظتی حصار قائم کر لیا اور سورج کی بالائے بنفشی شعاعوں ultra violet rays کو زمین تک پہنچنے سے روک کر پوری زمین کو زندگی کے لئیے محفوظ بنا دیا۔ اس کے بعد زندگی زمین پر پوری طرح پھیل گئی۔

  • زمین کی عمر
  • اگرچہ کائنات کی عمر کے بارے میں سائنسدان متفق نہیں ہیں ۔ لیکن زمین کی عمر کے بارے میں ان کا خیال ہے کہ آج سے پانچ ارب سال پہلے گیس اور غبار کا ایک وسیع و عریض بادل کشش ثقل کے

انہدام کے باعث ٹکروں میں تقسیم ہو گیا سورج جو مرکز میں واقع تھا سب سے زیادہ گیس اس نے اپنے پاس رکھی ۔ باقی ماندہ گیس سے دوسرے کئی گیس کے گولے بن گئے ۔ گیس اور غبار کا یہ بادل ٹھندا تھا اور اس سے بننے والے گولے بھی ٹھندے تھے ۔ سورج ستارہ بن گیا اور دوسرے گولے سیارے ۔ زمین انہی میں سے ایک گولہ ہے ۔ سورج میں سارے نظام شمسی کا 99٪ فیصد مادہ مجتمع ہے ۔ مادے کی کثرت اور گنجانی کی وجہ سے اس میں حرارت اور روشنی ہے ۔ باقی ماندہ ایک فی صدی سے تمام سیارے جو نظام شمسی کا حصہ ہے بنے ۔ نظام شمسی کے یہ گولے جوں سکڑتے گئے ان میں حرارت پیدا ہونے لگی ۔ سورج میں زیادہ مادہ ہونے کی وجہ سے اس شدید سمٹاؤ کی وجہ سے اٹمی عمل اور رد عمل شروع ہوا اور اٹمی دھماکے شروع ہوئے ، جس سے شدید ایٹمی دھماکے ہوئے ، جن سے شدید حرارت پیدا ہوئی ۔ زمین میں بھی ان ہی اصولوںکے تحت حرارت پیدا ہوئی ۔ حرارت سے مادہ کا جو حصہ بخارات بن کر اڑا فضا کے بالائی حصوں کی وجہ سے بارش بن کر برسا ۔ ہزاروں سال یہ بارش برستی رہی ۔ ابتدا میں تو بارش کی بوندیں زمین تک پہنچتی بھی نہیں تھیں ۔ بلکہ یہ راستہ میں دوبارہ بخارات بن کر اڑ جاتی تھیں ۔ مگر لاکھوں کروڑں سال کے عمل سے زمین ٹھنڈی ہوگئی ۔ اس کی چٹانیں بھی صاف ہوئیں خشکی بھی بنی اور سمندر وجود میں آئے۔

                                     

2. ساخت اور ڈھانچہ

زمین قطبین پر شلجم کی طرح تقریباً چپٹی گول شکل میں ہے۔ زمین کے گھومنے سے اس میں مرکز گریز اثرات شامل ہوجاتے ہیں۔ جس کے باعث یہ خط استوا کے قریب تھوڑی ابھری ہوئی ہے اور اس کے قطبین یا پولز قدرے چپٹے ہیں۔ ان مرکز گریز اثرات ہی کی وجہ سے زمین کے اندرونی مرکز سے سطح کا فاصلہ خط استوا کے مقابلے میں قطبین پر 33 فیصد کم ہے۔ یعنی مرکز سے جتنا فاصلہ خط استوا کے مقامات پر زمین کی سطح تک ہے مرکز سے قطبین کی سطح کا فاصلہ اس سے لگ بھگ ایک تہائی کم ہے۔

                                               

گھماؤں

گھماؤں زمین کی پیمائش کا دیسی پیمانہ ہے۔ ایک گھماؤں 2 بیگھے یا 8 کنال یا 1440 مربع کرم یا ایک ایکڑ کے برابر ہوتا ہے۔گھماؤں کا لفظی مطلب چکر یا پھیر ہے۔ایک گھماؤں سے مراد زمین کی وہ مقدار جسے بیلوں کی ایک جوٹ دن بھر میں جوت ڈالتی ہے۔

طالبیہ
                                               

طالبیہ

طالبیہ) مغربی یروشلم میں ایک اعلیٰ درجے کا محلہ ہے۔ یہ 1920ء اور 1930ء کی دہائی میں یروشلم کے یروشلمی راسخ الاعتقاد کلیسیا سے خریدی گئی زمین پر تعمیر کیا گیا۔ ابتدائی بیشتر رہائشی مشرق وسطی کے متمول مسیحی عرب تھے جنھوں نے نشاۃ ثانیہ میں خوبصورت گھر بنائے۔

                                               

میگی اینڈ دی فیروئسس بیسٹ

میگھی نامی ایک 5 سالہ بچی نے ایک خیالی زمین تیار کی ہے جہاں وہ اور اس کے پسندیدہ کھلونے ، ہیملٹن ہاکس اور فیروکیئس جانور ، کھیل سکتے ہیں اور مہم جوئی کر سکتے ہیں۔ فیروئسس جانور حیوان کے سوا کچھ بھی نہیں ہے ، حالانکہ وہ بڑا ہے ، اس کے سر پر سرخ دھبے اور تین سینگ ہیں۔