Back

ⓘ السلام




                                               

نذر عباس حسنی

سید نذر عباس حسنی کی وجہِ شہرت ان کی لکھی ہوئی کتابیں ہیں کہ جن میں سے زیادہ تر انھوں نے عربی سے اردو میں ترجمہ کی ہیں اب تک وہ سو سے زیادہ موضوعات پر لکھ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ گزشتہ کئی سالوں سے حضرت علی بن ابی طالب علیہ السلام اور حضرت عباس بن علی علیہ السلام کے حرم میں شعبہ اردو میں خدمات سر انجام دے رہے ہیں

                                               

سید نذر عباس حسنی

سید نذر عباس حسنی کا تعلق پاکستان سے ہے اور ان کا شمار نجف اشرف کے معروف اساتذہ میں ہوتا ہے۔۔ ان کی ایک وجہِ شہرت ان کی لکھی ہوئی کتابیں ہیں کہ جن میں سے زیادہ تر انھوں نے عربی سے اردو میں ترجمہ کی ہیں اب تک وہ سو سے زیادہ موضوعات پر لکھ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ گزشتہ کئی سالوں سے حضرت علی بن ابی طالب علیہ السلام اور حضرت عباس بن علی علیہ السلام کے حرم میں شعبہ اردو میں خدمات سر انجام دے رہے ہیں۔

                                               

مقسط بن زہیر تغلبی

مقسط بن زهير بن الحرث التغلبي أصحاب علي بن أبي طالب میں سے تھے اور امام علی کے ساتھ تینوں جنگوں جنگ صفین ، جنگ جمل اور جنگ نہروان میں شرکت کی اور حسين بن علي بن أبي طالب کی طرف سے معركہ كربلاء میں یزیدی لشکر کے ساتھ لڑے اور شہادت پائی ۔ آپ کوفہ کے رہنے والے تھے۔ مسقط بن زہیر بن حرث تغلبی شہادت 61ھ، امام علی علیہ السلام کے اصحاب اور شہدائے کربلا میں سے ہیں۔ مسقط واقعہ کربلا میں اپنے بھائیوں کردوس اور قاسط کے ساتھ رات کی تاریکی میں امام حسین علیہ السلام کے لشکر میں شامل ہوئے اور عاشورہ کے دن عمر بن سعد کی فوج کے پہلے حملے میں شہید ہوئے ۔

                                               

اصغریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان

اصغریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان ایک شیعہ طلبہ تنظیم ہے۔ جس کا نصب العین اسلامی تعلیمات اور سیرت محمد و آل محمد کے مطابق نوجوانوں کی تربیت کرنا اور باطل کے مقابلے کے لیے آمادہ کرناہے تاکہ حقیقی مومن بن کر اسلامی معاشرہ تشکیل دیں۔ پاکستان کی آزادی کے بعد شیعہ طلبہ نے اصغریہ کا بنیاد جامعہ سندھ، جامشورو میں 1967ع انجمن اصغریہ کے نام سے رکھا گیا، جو بعد میں اصغریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن سندھ اور 1976ع میں اصغریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کا نام دیا گیا۔ تنظیم اصغریہ نے ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ کسی تعلیمی ادارے میں "یوم حسین علیہ السلام" کا بنیاد رکھا اور اسی سال پہلا میگزین "الحسین" کے نام س ...

                                               

مدورائی مقبرہ

مدورائی مقبرہ تین صوفی سنتوں کی درگاہوں کی طرف مشیر ہے: میر احمد ابراہیم ، میر امجد ابراہیم اور عبد السلام ابراہیم جو کاظمیر بڑی مسجد ، مدورائی ، ہندوستان میں واقع ہے ۔ عربی زبان کا لفظ "مقبرہ" ، جس کا مطلب مزار ہے ، "قبر" کے لفظ سے مشتق ہے ، جس کے معنی قبر ہیں ۔ اگرچہ مقبرہ سے مراد مسلمانوں کی تمام قبروں سے ہے ، یہ خاص طور پر بزگان دین اور صوفیا کرام کے مزارات کے لیے استعمال ہوتا ہے، جنھوں نے اپنی زندگیاں اسلام کے لیے وقف کر دیں اور جن کی کوشش یہ ہوتی ہے کہ ان کی زندگی اسلام کے مطابق ہو اور وہ پیغمبر اسلام کی تعلیمات پر عمل پیرا ہونے کے لیے دوسروں کی تربیت کریں۔

                                               

وحی کا نزول

حضرت عروہ بن زبیر ؓ حضرت ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا سے نقل کرتے ہیں کہ انہوں نے بتلایا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم پر وحی کا ابتدائی دور اچھے سچے پاکیزہ خوابوں سے شروع ہوا۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم خواب میں جو کچھ دیکھتے وہ صبح کی روشنی کی طرح صحیح اور سچا ثابت ہوتا۔ پھر من جانب قدرت آپ صلی اللہ علیہ وسلم تنہائی پسند ہو گئے اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے غار حرا میں خلوت نشینی اختیار فرمائی اور کئی دن اور رات وہاں مسلسل عبادت اور یاد الٰہی و ذکر و فکر میں مشغول رہتے۔ جب تک گھر آنے کو دل نہ چاہتا توشہ ہمراہ لیے ہوئے وہاں رہتے۔ توشہ ختم ہونے پر ہی اہلیہ محترمہ خدیجہ رضی اللہ عنہا کے پاس ت ...

                                               

صلاح الدین طوفانی

صلاح الدین طوفانی کی ولادت 1948ء کو پاکستان کے شمال مغربی صوبہ سندھ کے چوتھے سب سے بڑے شہر لاڑکانہ میں ہوئی۔‌ انہوں نے اداکاری کا آغاز کراچی جانے کے بعد کیا۔ صلاح الدین طوفانی نے کئی ٹیلی ویژن ڈراموں میں کام کیا۔

                                               

سید لعل حسین دوالمیالوی

صوفی کامل ولی العصر مناظر السلام شاعر بارگاہ رسالت علامہ مفتی پیر سید لعل حسین شاہ دوالمیالوی چشتی نظامی تحصیل چوآ سیدن شاہ ضلع چکوال کے معروف گاوں دوالمیال کے مشہدی کاظمی سادات کے عظیم مبلغ مولانا سید رسول شاہ کے گھر آپ کی ولادت با سعادت ہوئی آپ کے والد ساتھ والے گاوں تترال کی جامع مسجد میں امامت وخطابت کے فرائض سر انجام دیتے تھے۔

                                               

یارسی یونیورسٹی

یونیورسٹاس یارسی؛ 15 اپریل 1967 کو اسلامک ہاسپٹل فاؤنڈیشن انڈونیشیا انڈونیشیائی: Yayasan Rumah Sakit Islam Indonesia یا YARSI نے قائم کیا تھا۔ اس کی حیثیت 1969 میں جکارتا کے یارسی میڈیکل اسکول میں تبدیل ہو گئی۔ ایک بار جب یارسی میڈیکل اسکول کے طور پر قائم ہوا ، بانیوں نے ایک نیا فیکلٹی تشکیل دیا ، 1988 سے 1999 تک تین فیکلٹیاں قائم کی گئیں ، اقتصادیات کی فیکلٹی ، قانون ، صنعت کی فیکلٹی ٹیکنالوجی اب اطلاعاتی ٹیکنالوجی کی فیکلٹی۔ اسی وقت جکارتا کے یارسی میڈیکل اسکول کو طب کی فیکلٹی بنا دیا گیا اور چاروں ہی فیکلٹیاں یونیورسٹاس یارسی بن گئیں۔ 2007 میں یارسی نے نفسیات کی فیکلٹی کو شامل کیا گیا۔ ...

السلام
                                     

ⓘ السلام

اللہ تعالیٰ کے وصف کلام کے ساتھ موصوف ہونے کے معنی یہ ہیں کہ جو عیوب و آفات اور مخلوق کو لاحق ہوتے ہیں اللہ تعالیٰ ان سب سے پاک ہے ۔ السلام: ای ذو سلامۃ من النقائص۔ یعنی ہر قسم کی خامیوں سے محفوظ۔ اور بعض نے کہا ہے کہ اس کا معنی یہ ہے کہ وہ اپنے بندوں کو آلام و مصائب سے بچاتا ہے۔

                                     

1. قرآن میں ذکر

اللہ تعالیٰ نے فرمایا:

  • هُوَ اللَّهُ الَّذِي لَا إِلَهَ إِلَّا هُوَ الْمَلِكُ الْقُدُّوسُ السَّلَامُ الْمُؤْمِنُ الْمُهَيْمِنُ الْعَزِيزُ الْجَبَّارُ الْمُتَكَبِّرُ سُبْحَانَ اللَّهِ عَمَّا يُشْرِكُونَ

اللہ مقدس، سلامتی والا بادشاہ ہے۔ السلام وہ ہے جس کی صفات، افعال، اقوال، قضا و قدر اور شریعت محفوظ ہیں۔ بلکہ اس کی ساری شریعت حکمت، رحمت، مصلحت، عدل اور سلامتی سے پر ہے۔ السلام: وہ ہے جو جنت میں اپنے بندوں پر سلامتی نازل فرمائے گا۔ جیسا کہ اللہ تعالیٰ نے فرمایا:

  • سَلَامٌ قَوْلًا مِن رَّبٍّ رَّحِيمٍ

رب رحیم کی طرف سے کہا جائے گا تم پر سلامتی ہو، نیز ا س لیے بھی اللہ تعالیٰ السلام ہے کہ اس نے بندوں کو اپنے ظلم سے محفوظ و سالم بنا دیا۔ اللہ تعالیٰ ہر نقصان اور کمزوری سے محفوظ ہے نہ اس کی ذات کو کسی قسم کی کمزوری لاحق ہوتی ہے اور نہ اس کی صفات میں ضعف واقع ہوتا ہے۔ وہ ہر حال میں السلام ہے اور سلامتی عطا کرنے والا ہے۔ اس کے سوا کوئی سلامتی عطا نہیں کر سکتا ۔

                                     

2. حدیث میں ذکر

عَنْ ثَوْبَانَ قَالَ کَانَ رَسُول اللَّہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم إِذَا انْصَرَفَ مِنْ صَلاَتِہِ اسْتَغْفَرَ ثَلاَثًا وَقَال اللَّہُمَّ أَنْتَ السَّلاَمُ وَمِنْکَ السَّلاَمُ تَبَارَکْتَ ذَا الْجَلاَلِ وَالإِکْرَامِ) ” حضرت ثوبان بیان کرتے ہیں کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم جب نماز سے فارغ ہوتے تو تین مرتبہ استغفار کرتے اور یہ دعا پڑھتے۔ ” اللَّہُمَّ أَنْتَ السَّلاَمُ وَمِنْکَ السَّلاَمُ تَبَارَکْتَ ذَا الْجَلاَلِ وَالإِکْرَام" ” اے اللہ تو سلامتی والا ہے اور سلامتی تجھی سے حاصل ہوتی ہے بیشک تو بابرکت اور جلال واکرام والا ہے۔"

فاخر محمود
                                               

فاخر محمود

فاخر محمود پاکستانی گلوکار، کمپوزر اور میوزک پروڈیوسر ہیں۔ فاخر محمود کو 2007 میں صدر پاکستان نے تمغائے حسن کارکردگی سے نوازا۔